63

لندن کے پارلیمنٹ اسکوائر سے بھارتی سفارتخانے تک ہزاروں کشمیریوں کا زبردست احتجاجی مظاہرہ

لندن(نمائندہ خصوصی) لندن کے پارلیمنٹ اسکوائر سے بھارتی سفارتخانے تک ہزاروں کشمیریوں کا زبردست احتجاجی مظاہرہ اور مارچ۔اس موقع پر آزا د کشمیر کے سابق وزیر اعظم و پی ٹی آئی کشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے مظاہرے خصوصی طور پر شرکت کی۔ اس موقع پر مظاہرین گو مودی گو،مودی کشمیریوں کا قاتل،مودی دہشتگرد، بھارتی غاصبو کشمیر ہمارا چھوڑ دو، کشمیر کشمیریوں کا ہے،ہے حق ہمارا آزادی، کشمیریوں کو حق خود ارادیت دو جیسے فلک شگاف نعرے لگا رہے تھے اور انھوں نے اسی طرح کے بینرز، پینا فلیکس اور پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے تھے۔اس موقع پر خواتین کی بھی بڑی تعداد مظاہرے میں شریک تھی۔اس مظاہرے کی خصوصیت یہ تھی کے اس موقع پر مظاہرین نے صرف آزاد کشمیر کے جھنڈے اٹھا رکھے تھے۔اس موقع پر مارچ سے خطاب کرتے ہوئے بیرسٹرسلطان محمود چوہدری نے کہا کہ مودی بھارت کا گوربا چوف ثابت ہو گا اور بھارت کا شیرازہ جلد بکھر نے والاہے کیونکہ بھارت کوئی ملک نہیں بلکہ ایک ریجن ہے جو جلد ٹوٹ کر مختلف حصوں میں تقسیم ہو جائے گا اور بھارت جمہوریت نہیں بلکہ دنیا کی سب سے بڑی آمریت ہے جو وہاں پر مقیم اقلیتوں پر مسط ہے۔جبکہ بھارت میں صرف کشمیری ہی نہیں بلکہ پنجاب آسام، اور دیگر علاقوں میں بھی لوگ آزادی کی تحریکیں چلا رہے ہیںاور اب بہت جلدبھارت کے سیکولرازم کی قلعی کھلنے والی ہے اور بھارت کا شیرازہ بکھرنے والا ہے بھارت بھی بہت سے حصوں میں بٹنے والا ہے جیسا کہ سویت یونین ٹوٹ گیا تھا۔بھارت کشمیر پر جارح ہے اور اس کا کشمیر پر قبضہ غاصبانہ اور جابرانہ ہے۔اب وقت آگیا ہے کہ دنیا بھر میں کشمیری بھارتی تسلط سے آزادی کے لئے اٹھ کھڑے ہوں برطانیہ اور عالمی برادری کشمیریوں کو ان کا حق خود ارادیت دلوانے ، مقبوضہ کشمیر میں مظالم رکوانے،وہاں پر ایک ماہ سے جاری مسلسل کرفیوں ختم کرانے اور مسئلہ کشمیر حل کرانے کے لئے اپنا رول ادا کرے۔انھوں نے کہا کہ اقوام عالم بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں جاری مظالم کا نوٹس لیں۔دنیا کو خاموش تماشائی نہیں بننا چاہیے اور مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی پر بھارت کو مجرموں کے کٹہرے میں لانا چاہیے۔ ہم امید کرتے ہیں کہ عالمی طاقتیں مسئلہ کشمیر کے پر امن حل کے لئے اپنا کردارادا کریں گی اور مقبوضہ کشمیر کی مخدوش صورتحال کا نوٹس لیں گی۔بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا کہ ہم یہاں لندن سے مقبوضہ کشمیر کے عوام کو یقین دلاتے ہیں کہ وہ اپنی جدوجہد میں تنہاء نہیں بلکہ ہم انکے شانہ بہ شانہ ہیں اور دنیا بھر میں مقیم کشمیر مقبوضہ کشمیر میں مظالم رکوانے اور حق خود ارادیت کے لئے ہر فورم پر اپنی آواز بلند کریں گے۔بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے کہا کہ میں نے تین ممالک کا دورہء کیا ہے اور میں نے اپنے دورے کے دوران یہ دیکھ لیا ہے کہ کشمیری اب آزادی سے کم کسی چیز پر راضی نہیں ہو نگے۔ بھارت کو مقبوضہ کشمیر پر اپنا غاصبانہ، جابرانہ قبضہ اب ختم کر نا ہوگا۔مقبوضہ کشمیر بھارتی تسلط سے انشا ء اللہ جلد آزاد ہو گا۔اس مظاہرے اور مارچ کی خصوصیت یہ تھی کہ اس میں آزاد کشمیر اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر چوہدری یاسین، وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان ، چوہدری شعبان، چوہدری حکمداد، چوہدری دلپذیر،چوہدری خورشید اور دیگرجماعتوں کے رہنماء بھی شریک تھے۔***

اپنا تبصرہ بھیجیں