18

سید سرفراز حسین جعفری نے میونسپل کارپوریشن آفس کے باہر مجلس عزاء کے موقع پر قراردادیں پیش کیں

گجرات (جی پی آئی) صدر حسینیہ ٹرسٹ پروفیسر سید سرفراز حسین جعفری نے میونسپل کارپوریشن آفس کے باہر مجلس عزاء کے موقع پر قراردادیں پیش کیں جنہیں متفقہ طور پر منظور کیا گیا ، انہوں نے کہا کہ مرکزی جلوس زیر انتظام حسینیہ ٹرسٹ رجسٹرڈ سرکلر روڈ گجرات میں گجرات میونسپل کارپوریشن کے باہر عزاداران ماتمی ، مومنین و دیگر برادران اسلام کے عظیم اجتماع میں منظور کی گئی ، عزادارانِ امام حسین علیہ السلام کا یہ عظیم اجتماع 61ء خاندان رسالت پر ڈھائے گئے مظالم ، اسلام اور ناموسِ رسالت کی توہین پر سراپا احتجاج ہے اور امام عصر کی خدمت میں ہدیہ تعزیت و تسلیت پیش کرتا ہے ۔ قیام امام حسین توحید اور نظام توحید ، دین اسلام کو بچانے کیلئے تھا ۔ عزاداری ،سید الشہدا پیغام و کردار حسین کے ذریعہ اسلام کی تبلیغ و بقا اور اتحاد و وحدت کا ذریعہ ہے ۔ یہ اجتماع عزاداری مظلوم کربلا کو شایان شان طریقے سے منانے کا عہد کرتا ہے اور تمام حریت پسندوں ، امن پسندوں کو شمولیت کی دعوت دیتا ہے ۔ یہ اجتماع فرقہ واریت ، قتل و غارت ، دہشت گردی اور نفرت کی مذمت کرتا ہے اور پوری دنیا کے مسلمانوں کو متحد ہو کر ان برائیوں کو مٹانے کی دعوت دیتا ہے ۔ استعماری قوتوں کے آلہ کار دہشت گرد ، مسلمانوں کو مسلک کے نام پر لڑانا چاہتے ہیں لیکن تمام مسالک کے جید علما نے اتحاد و وحدت کے ذریعہ ثابت کر دیا ہے کہ تمام مسلمان جسد واحد کی طرح ہیں یہ اجتماع اس جذبے کی قدر کرتا ہے اور اتحاد امت کیلئے پورے تعاون کا یقین دلاتا ہے ۔ یہ اجتماع توہین رسالت و اہل بیت ، توہین صحابہ ، توہین ازواج رسول ، اور توہین اسلام کرنے والوں سے اظہار برأت کرتا ہے اور اطاعت و محبت کا معیار نسبت رسول ۖ کو سمجھتا ہے ۔ یہ اجتماع عزاداری کی مجالس اور ماتمی جلوسوں پر بے جا پابندیوں ، رکاوٹوں اور نفرت انگیز نعرے لگانے والوں کے خلاف سخت احتجاج اور مذمت کرتا ہے اور مطالبہ کرتا ہے کہ عزاداری ہمارا شہری ، آئینی ، قانونی حق ہے اس پر بے جا پابندیاں لگانا آئین پاکستان سے انحراف ہے ۔ ہمیں عزاداری کی مکمل آزادی ہونی چاہیے ۔ یہ اجتماع ملک میں دہشت گردی خصوصاً پارہ چنار ، کوئٹہ ، ڈیرہ اسماعیل خاں ، کراچی ، مہنگائی ، بیروزگاری ، بنیادی حقوق کی پامالی ، بے انصافی ، کرپشن ، رشوت ، سفارش ، چوری ڈاکے ، اور دیگر جرائم کی مذمت کرتا ہے اور حکومت سے ان برائیوں کے سد باب اور خاتمہ کیلئے راست اقدامات کا مطالبہ کرتا ہے ۔ یہ اجتماع کشمیری مسلمانوں پر جاری ظلم و ستم ، ایک ماہ سے زائد مدت سے جاری کرفیو کی مذمت کرتا ہے ملک کے دفاع کیلئے افواج پاکستان کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر کشمیر کی آزادی اور انڈیا دشمن کی طرف سے ملک کی سرحدوں کی حفاظت کیلئے حکمت عملی کی حمایت دلاتا ہے ۔ یہ اجتماع بحرین ، یمن ، فلسطین ، عراق ، شام ، برما ، روہنگیا کے مسلمانوں پر جاری ظلم و ستم اور نہتے شہریوں کی قتل و غارت پر شدید احتجاج کرتا ہے اور ان جدید کربلا کے مظلوموں کی حمایت کا یقین دلاتا ہے ۔ اسرائیل کی پشست پناہی کرنے والے مسلم و غیر مسلموں کی پشست پناہی سے صہیوتی طاقتوں کی مضبوطی اور نہتے مسلمانوں کی قتل و غارت گری کی مذمت کرتا ہے ۔ ملک میں دہشت گردوں کے قلع قمع اور ان کے ٹھکانوں کو ختم کرتے ہوئے افواج پاکستان اور پولیس کے شہداء کو خراج تحسین پیش کرتا ہے اور افواج پاکستان و دیگر سیکورٹی اداروں سے اظہار یکجہتی و اعتماد کا اظہار کرتا ہے ۔ یہ اجتماع حسینیت سے لازوال محبت اور یزیدیت سے نفرت کرتے ہوئے حسینی کردار و تعلیمات کو اپنانے کا عہد کرتا ہے اور تمام آزادی پسندوں ، حریت پسندوں کو بھی اس کی دعوت دیتا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں