39

سعودیہ پلٹ نوجوان کے قتل کا ڈراپ سین، بیوی تین ساتھیوں سمیت گرفتار

گجرات(پ ر)سعودیہ پلٹ نوجوان کے قتل کا ڈراپ سین۔گجرات:تھانہ صدر لالہ موسیٰ کے علاقہ میںشوہر کو آشنا اور اس کے ساتھیوں کے ہمراہ زہر دے کر ہارٹ اٹیک کا ڈرامہ رچانے والی بیوی تین ساتھیوں سمیت گرفتار۔تفصیلات کے مطابق تھانہ صدر لالہ موسیٰ کے علاقہ مراڑیاں میںسعودیہ پلٹ نوجوان جانبحق ہو گیا تھا جس پر اس کی بیوی نے اس کے رشتہ داروں کو اطلاع دی کہ اس کے خاوند کی وفات ہارٹ اٹیک آنے کی وجہ سے ہوئی ہے اور نوجوان کی تجہیز و تکفین کر دی گئی۔مورخہ 09.07.09کو یاسر شاہ کے چچا سجاد حسین شاہ نے تھانہ صدر لالہ موسیٰ پولیس کو اطلاع دی کہ میرا بھتیجا یاسر شاہ جو کہ سعودی عرب سے واپس آیا تھا نوجوان اور تندرست تھا مجھے قوی امکا ن ہے کہ اس کی بیوی مسماة ثناءلیاقت نے اسے قتل کیا ہے اس اطلاع پر ایس ایچ او تھانہ صدر لالہ موسیٰ انسپکٹر طارق شفیع نے فوری طور پر ڈی پی او گجرات سید علی محسن کو آگاہ کیا جس پر انہوں نے ایس ایچ او صدر لالہ موسیٰ کوہدایت جاری کی کہ فوری طور پر مقدمہ کا اندراج کیا جائے اور ملزمہ کو شامل تفتیش کر کے مقدمہ کو حقائق پر یکسو کیا جائے ۔ایس ایچ او صدر لالہ موسیٰ نے انچارج ہومی سائیڈ SIمحمدلطیف ،لیڈی کنسٹیبل اور دیگرپولیس اہلکاروں پر مشتمل ٹیم تشکیل دے کر ملزمہ ثنا ءلیاقت کو گرفتار کر کے تفتیش کا آغاز کیا دوران انٹیروگیشن ملزمہ نے اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے ہوشربا انکشافات کئے کہ اس کا خاوند بسلسلہ روز گار سعودی عرب مقیم تھا جو کہ چھٹی گزرنے گھر آیا تھا اس کے آنے سے قبل میں نے علی عمران شاہ ولد سجاد حسین جس کے ساتھ میرے مراسم تھے اور اس کے ساتھ مل کر اپنے خاوند کو راستے سے ہٹانے کا منصوبہ بنا رکھا تھا ،یاسر شاہ کے پاکستان آنے پر مورخہ 11.06.2019کو اس نے اپنے خاوند کو زہر دے دیا اور اپنے آشنا علی عمران شاہ ولد سجاد حسین شاہ سکنہ قاضیاں کرم شاہ اور اس کے دو ساتھیوں 1۔ سید حیدر عباس ولد سید قمر عباس سکنہ قاضیاں کرم شاہ 2۔تنویر عباس ولد بشیر احمد سکنہ چکوڑی شیر غاری کے ساتھ مل کر اس کاگلا دبا کر موت کے گھاٹ اتار دیا اور اس کی موت بذریعہ ہارٹ اٹیک ہونے کا ڈرامہ رچا دیا اور وہیں رہنے لگی تاکہ کسی کو مجھ پے شک نہ گزرے ۔ملزمہ کے انکشاف پر اس کے آشناءاور اس کے ساتھیوں کو بھی گرفتار کر لیا ،ملزمان سے مزید تفتیش جاری ہے ۔ڈی پی او گجرات سید علی محسن نے اندھے قتل کو ٹریس کرنے والی پولیس ٹیم کو تعریفی سرٹیفکیٹ سے نوازا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں