217

بھمبر میں طوفانی بارش برساتی نالوں میں شدید طغیانی، پانچ افراد جاں بحق

بھمبر (ڈسٹرکٹ رپورٹر ) بھمبر میں طوفانی بارش برساتی نالوں میں شدید طغیانی ہائی ایس برساتی نالے میں بہہ گئی دو خواتین سمیت پانچ افراد جاں بحق متعدد زخمی لوئر سیرلہ کے برساتی نالہ میں آنے والے شدید سیلابی ریلے کے باعث متعدد مکانوں کی دیواریں گر گئیں کئی کئی فٹ پانی گھروں اور دوکانوں میں داخل قبضہ مافیا کی طرف سے نالوں کے کناروں کو تنگ کرنے پر شہریوں کا شدید احتجاج میلاد چوک سے لیکر پٹرول پمپ تک کوٹھی موڑ ، گلشن کالونی ، شیر جنگ کالونی، علامہ اقبال ٹاؤن ، سکول روڈ ، وارڈ نمبر 1 رسول پور کالونی، محلہ مسجد صدیق اکبر ، لوئر ستھہ میں نالوں کی بر وقت صفائی نہ ہونے کے باعث بارش کا پانی گھروں ، دوکانوں میں داخل شہریوں کاکروڑوں روپے کا نقصان شہریوں کا بلدیہ بھمبر کی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار ڈپٹی کمشنر بھمبر سے بلدیہ کی ناقص منصوبہ بندی اور لوئر سیرلہ کے برساتی نالے پر ناجائز قبضے ختم کروانے کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق گذشتہ شب بھمبر اور گرد ونواح میں شدید طوفانی بارش ہوئی جس کے باعث نواحی برساتی نالوں میں شدید طغیانی آ گئی رات کو پنڈی جہونجہ بائی پاس روڈ سے آنے والی ہائی ایس نمبری RPT9187 جس میں ایک ہی خاندان کے سترہ مسافر سوار تھے برساتی نالے کے کازوے پر تیز سیلابی ریلہ آ جانے کے باعث بہہ گئی گاڑی کازوے سے بہتے ہوئے نالہ بھمبر میں جا گری اس دوران دو خواتین جن میں حمیدہ بی بی زوجہ محمد یونس ، غلام فاطمہ زوجہ محمد یعقوب ، عبدالغنی ولد محمد رفیق شامل ہیں موقع پر جاں بحق ہو گئے جبکہ ڈرائیور محمد پرویزاور جمیل ولد محمد یعقوب جو پانی کی تیز لہروں کی نذر ہو گئے کی تلاش جاری ہے جبکہ گاڑی میں سوار جن میں محمد شبیر ولد بشیر احمد، محمد حسین ولد باغ علی ، ذوالفقار احمد ولد رحم داد، محمد افضل ولد رشید احمد، فضلاں بی بی زوجہ محمد بوٹا، عقیل احمد ولد فضل الرحمن، حمیرا بی بی زوجہ محمد افضل، نذیر فاطمہ زوجہ آفتاب ، حنیفہ بی بی ، محمد رشید ولد شیر عالم، اقراء ولد محمد اکرام، محمد اصغر ولد عزیز ساکنان چھوا غازیاں ، چاہی تحصیل سماہنی کو ریسیکو کر کے بچا لیا گیاکشمیر کونسل کے کروڑوں روپے کے فنڈ سے پنڈی جہونجہ بائی پاس روڈ پر تعمیر کئے گئے کازوے جو کہ عین اصولوں کے مطابق تعمیر نہیں کیا گیا تھا یاد رہے کہ مذکورہ پنڈی جہونجہ بائی پاس روڈ پر ناقص اور نالہ کے لیول سے گہرائی میں بنائے گئے کازوے کی میڈیانے ایک سال قبل نشاندہی کی تھی جسے محکمہ شاہرات سمیت ذمہ دار ان نے نظر انداز کر دیا تھاٹھیکیدار نے کازوے کی تعمیر کے دوران چھوٹے نکاسی والے پائپ ڈال کر خانہ پری کی تھی کازوے کی تعمیر کے بعد گذشتہ سال کی نسبت امسال شدید بارش ہوئی کازوے کی ڈائزنگ انجینئرنگ اصولوں کے خلاف کرکے کازوے کا لیول سٹرک سے گہرا رکھا گیا جس کے باعث گذشتہ رات ہائی ایس ڈرائیور نالے میں آئی طغیانی کا اندازہ نہ لگا سکا اور گاڑی حادثہ کا شکار ہو گئی جس سے قیمتی انسانی جانوں کا ضیاع ہوا ہے عوامی اور سماجی حلقوں نے پیش آنے والے حادثے پر گہرے دکھ اور غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ محکمہ شاہرات، سٹرک تعمیر کرنے والا ٹھیکیدار اور ضلعی انتظامیہ کے سر جاتا ہے سینئر وزیر پیش آنے والے حادثہ کی تحقیقات کروائیں اور کازوے کی غلط ڈائزنگ کا نوٹس لیں اور کازوے کی جگہ چھوٹا پل تعمیر کروایا جائے تا کہ آئندہ اس طرح کے خونی حادثات رونما نہ ہوں گذشتہ رات ہونیوالی تیز بارش کے باعث بھمبر شہر کے مختلف نشیبی علاقوں میں بارش کا پانی لوگوں کے گھروں اور دوکانوں میں داخل ہو گیا جس کے باعث لوگوں کے قیمتی پارچہ جات اور دوکانوں میں موجود سامان و خوردو نوش سمیت دیگر اشیاء تباہ و برباد ہو گئیں گھروں میں پانی داخل ہونے کے باعث لوگ ساری رات جاگتے رہے یاد رہے کہ بلدیہ بھمبر نے موسم برسات شروع ہونے سے قبل نالوں کی صفائی کیلئے کسی قسم کی منصوبہ بندی نہ کی اور آج بھی شہر کے بڑے نالے گندگی سے اٹے پڑے ہیں گذشتہ دنوں ڈپٹی کمشنر بھمبر نے شہر کے مختلف حصوں کا دورہ کر کے بلدیہ بھمبر کو نکاسی آب کے نالوں کی صفائی کی ہدایت کی تھی جسے بلدیہ کے ذمہ داران نے ہوا میں اڑا دیا جس کے باعث گذشتہ رات ہونیوالی بارش سے شہر کے مختلف حصوں میلاد چوک سے لیکر پٹرول پمپ تک کوٹھی موڑ ، گلشن کالونی ، شیر جنگ کالونی، علامہ اقبال ٹاؤن ، سکول روڈ ، وارڈ نمبر 1 رسول پور کالونی، محلہ مسجد صدیق اکبر ، لوئر ستھہ کے علاقوں میں درجنوں مکانات اور دوکانیں بارشی پانی سے شدید متاثر ہوئے اور لوگوں کا کروڑوں روپے کا نقصان ہوا جبکہ دوسری طرف لوئر سیرلہ کے برساتی نالہ میں شدید سیلابی ریلہ علاقہ کے متعدد گھروں اور مکانوں میں داخل ہو گیا جس کے باعث کئی گھروں کی دیواریں گھر گئیں اور قیمتی سامان کو شدید نقصان پہنچا اہلیان علاقہ لوئر سیرلہ نے کہا ہے کہ قبضہ مافیا نے نالہ کے کناروں پر قبضے کر کے نالہ کی حدود میں دیواریں تعمیر کر رکھی ہیں جس کے باعث نالہ میں آنیوالی شدید طغیانی کا پانی کناروں سے اوپر چڑھ کر ارد گرد کی آبادیوں میں پھیل جاتا ہے جس سے عوام علاقہ کا نقصان ہو رہا ہے بھمبر بائی پاس روڈ پر تعمیر پلی کے فرش کا لیول گہرا نہ ہونے کے باعث نالہ میں ریت بھی بھر گئی ہے جس سے سیلابی پانی آبادیوں کو شدید متاثر کر رہا ہے ڈپٹی کمشنر بھمبر لوئر سیرلہ نالہ کے اردو گرد ناجائز تجاوزات ختم کروا کر نالے کی حدود کو کھلا کروائیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں