24

اشٹام فروشوں کی لوٹ مار عروج پر 50 روپے مالیت کا اشٹام 150 روپے میں فروخت

گجرات (جی پی آئی) تبدیلی آ نہیں رہی تبدیلی آ گئی ہے گجرات ضلع کچہری میں چھوٹی مالیت کے اشٹام پیپرز نایاب اشٹام پیپرز نایاب ہونے پر اشٹام فروشوں کی لوٹ مار عروج پر 50 روپے مالیت کا اشٹام 150 روپے میں دھڑلے سے فروخت کیا جا رہا ہے ضلعی انتظامیہ ،گجرات بار ایسوسی ایشن کے ذمہ داران اور دیگر ارباب اختیار لمبی تان کر سو گئے اشٹام فروشوں کی لوٹ مار کے سب سے زیادہ متاثر نونہالان مستقبل ہیں جنھیں میٹرک کے بعد کالجز میں داخلے کے لیئے ڈومیسائل کی درخواست اور داخلہ فارموں کے ساتھ بیان حلفی کے طور پر اشٹام پیپر لگانا ضروری ہوتا ہے نوجوانوں اور ان کے والدین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ضلعی انتظامیہ اورمحکمہ خزانہ کے ارباب اختیار اگر چھوٹی مالیت کے اشٹام پیپرز مارکیٹ میں فراہم نہیں کر سکتے تو ڈومیسائل کے لیئے اشٹام کی شرط ختم کر دی جائے نیز چیف جسٹس سپریم کورٹ ،چیف جسٹس ہائیکورٹ ،وزیر اعلی پنجاب ،چیف سیکر ٹری پنجاب ،کمشنر گوجرانوالہ ،ڈپٹی کمشنر گجرات اور ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج گجرات اشٹام فروشوں کی بلیک میں فروخت اور محکمہ خزانہ کی طرف سے اشٹام کی فراہمی میں غفلت کا فی الفور نوٹس لیں اشٹام فروشوں نے میڈیا کے نمائندگان سے اپنا موقف دیتے ہوئے کہا کہ چھوٹی مالیت کے اشٹام محکمہ خزانہ کی طرف سے جاری نہیں کیے جا رہے ہم کہاں سے لوگوں کو دیں بیان حلفی کے لیئے بڑی مالیت کے اشٹام خریدنا عوام کے ساتھ ظلم ہے میڈیا کی طرف سے بار بار اس مسئلے کی نشاندہی کے باوجود محکمہ خزانہ گجرات کے ارباب اختیار ٹس سے مس نہیں ہو رہے ہم بھی مجبور ہیں لوگ سمجھتے ہیں کہ ہم جان بوجھ کر ایسا کر رہے ہیں جو انکی غلط فہمی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں