327

کرونامریضوں کی تعداد50ہوگئی،لاک ڈائوں مزیدسخت کردیاگیا

گجرات۔ (نمائندہ خصوصی)ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر خرم شہزاد نے کہا ہے کہ ضلع میں کرونا کے پازیٹو مریضوں کی تعداد میں اضافہ کے پیش نظر لاک ڈاؤن کے دوران پابندیوں کو مزید سخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، حکومت پنجاب کی ہدایات کے مطابق رات 8بجے کے بعد پرچون کی دوکانیں و غیرہ بند کر دی جائیں گی اور گڈز ٹرانسپورٹ کے سوا کسی قسم کی گاڑیوں کو سڑکوں پر آنے کی اجازت نہیں ہوگی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے کمشنر گوجرانوالہ ڈویژن کی زیر صدارت ویڈیو لنک کانفرنس، میڈیا بریفنگ کے دوران کیا، ڈی پی او سید توصیف حیدر، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر توقیر الیاس چیمہ، اے سی محمد جمیل، ڈ ی ایم او فہد اعجاز بھی اس موقع پر موجود تھے۔ ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر خرم شہزاد نے بتایا کہ گزشتہ روز ضلع گجرات کے مجموعی طور پر 150مشتبہ افراد کے کرونا ٹیسٹ کی رپورٹس موصول ہوئی تھیں ان میں سے مزید افراد کی رپورٹ پازیٹو آنے سے کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 21سے بڑھ کر 50ہو گئی ہے، یہ صورتحال نہایت خطرناک ہے اور اس امر کی متقاضی ہے کہ ہم سب لوگ گھروں میں رہیں، اگر سبزی، پھل، یا کوئی چیز خریدنی ہے تو گھر کے قریب ترین دوکان سے خرید لی جائے نہ کہ کئی کلو میٹر دور جایا جائے۔ ڈپٹی کمشنر نے بتایا کہ صورتحال کے پیش نظر لاک ڈاؤن کو مزید سخت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جس کیلئے قانون نافذ کرنیوالے اداروں کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ رات آٹھ بجے کے بعد سے صبح آٹھ بجے تک ہر قسم کی دوکانیں، سڑکوں پر آمد و رفت بند کر دی جائے گی اور لوگوں کو گھروں سے باہر نکلنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ کرونا ایک خطرناک وبا ہے جس کی روک تھام کا واحد حل یہی ہے کہ ہم زیادہ سے زیادہ اپنے گھروں میں رہیں، بار بار ہاتھوں کو دھوئیں، سماجی میل جول سے اجتناب کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں