57

برسلز: مقبول بٹ نے آزادی کے عظیم مقاصد کے لیے قربانی دی، کشمیرکونسل ای یو

برسلز(پ۔ر)کشمیرکونسل یورپ (ای یو) کی کور کمیٹی کے اجلاس میں عظیم کشمیری سپوت شہید مقبول بٹ کو زبردست الفاط میں خراج عقیدت پیش کیا گیا۔مقبول بٹ کی برسی کی مناسبت سے کشمیرکونسل ای یو کی کور کمیٹی کا اجلاس پیر کے روز کونسل کے مرکزی سیکرٹریٹ واقع برسلز میں ہوا۔ اجلاس میں اس بات کا اعلان کیا گیا کہ منگل گیارہ فروری کے روز مقبول بٹ کی برسی کے موقع پربھارتی سفارتخانے کے باہر مظاہرہ میں بھرپور شرکت کی جائے گی۔اجلاس کے صدارت کشمیرکونسل ای یو کے چیئرمین علی رضا سید نے کی۔ اجلاس میں مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال پر سخت تشویش ظاہر کی گئی اور عالمی برادری سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر کی گھمبیر صورتحال کا نوٹس لے۔اجلاس کے دوران علی رضا سید نے کہاکہ مقبول بٹ کشمیر کی دھرتی کے عظیم سپوت ہیں، ان کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی۔ انھوں نے کہاکہ شہدا نے شمع کی مانند تحریک آزادی کشمیرکو روشنی فراہم کی ہے۔ ہم آزادی کے حصول تک اپنی پرامن جدوجہد جاری رکھیں۔ واضح رہے کہ محمد مقبول بٹ کو گیارہ فروری 1984 کو بھارت کی تہاڑ جیل میں پھانسی دے کر ان کے جسد خاکی کوان کے وارثین کی مرضی کے خلاف وہاں ہی جیل میں دفن کردیاگیاتھا۔ اجلاس میں مطالبہ کیا گیا کہ مقبول بٹ اور افضل گرو کے اجساد خاکی کو کشمیر میں ان کے لواحقین کے حوالے کیا جائے چیئرمین کشمیرکونسل ای یو علی رضا سید نے واضح کیاکہ پھانسیاں دے کر اور ظلم و جبر کے ذریعے اور مسلسل کرفیو لگا کر اور محاصرہ جاری رکھ کر بھارت اپنے مذموم مقاصد حاصل نہیں کرسکتا بلکہ اسے کشمیریوں کوانکا حق خودارادیت دیناہوگا۔ علی رضاسید نے مقبوضہ کشمیر میں چھ ماہ سے جاری فوجی محاصرہ ختم کرنے، قید سیاسی رہنماوں کی رہائی اور ماورائے عدالت قتل و غارت کی روک تھام کا بھی مطالبہ کیا۔ چیئرمین کشمیرکونسل ای یو نے کہاکہ بھارت ظلم و بربریت کرکے تحریک آزادی کشمیر کو نہیں دباسکتا۔ کشمیریوں کی تحریک ضرور کامیاب ہوگی اور انہیں ایک دن ضرور آزادی ملے گی۔اجلاس کے شرکا نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند کروائے اور مسئلہ کشمیر کے پرامن حل کے لیے اپنا مثر کردار ادا کرے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں