لزبن (ضیاء سید سے) پرتگال، یونان اور اسپین میں مقیم پاکستانی تارکین وطن نے حکومت پاکستان سے مدد طلب کر لی تفصیلات کے مطابق پرتگال میں مقیم پاکستانی کمیونٹی کے راہنماؤں نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ پرتگال اور اسپین کے لیے فی الفور پی آئی اے کی ایک خصوصی پرواز چلائی جائے جو پاکستان میں پھنسے ہوئے پاکستانیوں کو پرتگال کے دارلحکومت لزبن اور اسپین کے شہر بارسلونا واپس لائے اور پرتگال اور اسپین سے پاکستان جانے کے خواہشمند افراد کو واپس لے کر جائے بشمول اسپین میں موجود تقریبا 11 پاکستانیوں کی میتوں کو بھی۔ اس مطالبہ سے قبل پاکستانی کمیونٹی کے راہنماؤں نے پرتگال اور اسپین میں تعینات پاکستانی سفیروں سے بھی یہ مطالبہ کیا ہے اور کرونا وائرس کے پیش نظر پیدا ہونے والے مسائل سے بھی آگاہ کیا جب کہ کرونا وائرس کی وبا کے پیش نظر پرتگال اور اسپین میں کمیونٹی کی تنظیموں اور دیگر مخیر حضرات کے تعاون سے ضرورت مند پاکستانیوں کو خوراک کی فراہمی اور صحت عامہ کے مسائل سے آگاہی اور راہنمائی میں مدد فراہم کی جا رہی ہے جبکہ یونان میں غیر قانونی طریقہ سے آنے والے ہزاروں پاکستانیوں کو بھی صحت اور کھانے پینے کی اشیاء کی قلت کا سامنا ہے اور یہ تمام پاکستانی یونان کے مختلف جزیروں پر پھنسے ہوئے ہیں اور ان کا برا حال ہے یونان کے دارلحکومت ایتھنز اور گردونواح میں موجود پاکستانیوں کی مدد کے لیے کام جاری ہے جب کہ یونان کے جزیروں پر بنائے گئے پناہ گزینوں کے کیمپوں میں موجود افراد کو صحت کی سہولتیں میسر نہ ہیں اور کرونا وائرس سے ایک بڑی تعداد متاثر ہونے کا خدشہ ہے جب کہ کھانے پینے کی اشیاء کی بھی قلت کا سامنا ہے ۔ پاکستانی تارکین وطن نے وزیر اعظم اور وزیر خارجہ سے مسائل کے حل کے لیے فی الفور اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ پرتگال ۔ یونان اور اسپین میں موجود پاکستانی کمیونٹی کی ایک بڑی تعداد محنت مزدوری۔ زراعت وغیرہ کے شعبہ سے منسلک ہے. جب کہ یورپ بھر میں ایمرجنسی کے نفاذ میں مئ تک توسیع کی گئ ہے اور 25 مئی تک نان یورپین ممالک سے فلائٹ آپریشن معطل رہے گا

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔