لندن ….. پرائیڈ آف ڈیمو کریسی انٹر نیشنل نے جنگ و جیو گروپ کے ایڈیٹر اِن چیف میر شکیل الرحمٰن کی گرفتاری پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔پی او ڈی آئی کی جانب سے جاری کردہ بیان میں چیئر مین عمر میمن نے میر شکیل الرحمٰن کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں آزاد صحافت کو انتہائی مشکلات کا سامنا ہے۔آزادئی صحافت کی صور تِ حال موجودہ دورِ حکومت میں انتہائی افسوس ناک ہے ۔عمر میمن نے مزید کہا کہ میر شکیل الرحمان کی گرفتاری قانونی سے زیادہ انتقامی اور ذاتی عناد نظر آتی ہے۔حکومت کی جانب سے میڈیا پر پابند ی کو سخت کرنا اور غیر جانب دار،آزادد میڈیاآ رگنائزیشن کو ہراساں کرنا ایک منظم سازش دکھائی دیتی ہے ۔انھوں نے کہا کہ جنگ گروپ سمیت دیگر میڈیا اداروں کے مالکان کے خلاف انتقامی کار روائیوں کا منفی اثر ملازمین اور ان کے خاندانوں پر معاشی مشکلات کی صورت میں بھی پڑ رہا ہے۔ میڈیا کے اشتہارات کی بندش کے مضر اثرات سامنے آ رہے ہیں۔ مالی حالات مزید خراب ہونے سے اداروں میں چھانٹیاں اور ورکروں کو ملازمت سے فارغ کرنے کا عمل شروع ہو چکا ہے۔انھوں نے مزید کہا کہ سرکاری اشتہارات کی بندش اور دباؤ بھی ایک طرح کی غیر علانیہ سینسر شپ ہے۔حکومت ایک طرف تولوگوں کو روزگا فراہم کرنے کی بات کرتی ہے لیکن عملی طورپر ہزاروں لوگوں کو بے روزگاری کی جانب دھکیل رہی ہے ۔عمر میمن نے کہا کہ ایک جانب پاکستان سمیت پوری دنیا کورونا وائرس سے مقابلے کی کوشش کر رہی ہے تو دوسری جانب موجودہ حکومت میڈیا اور سیاسی مخالفین کے خلاف انتقامی کاروائیوں میں مصروف ہے۔ان حالات میں وزیر اعظم اور حکومت کو میڈیا اور تمام سیاسی جماعتوں کو ساتھ لے کر اس وباءکا مقابلہ کرنا چاہیے تھا۔ بیان کے آخر میں پرائیڈ آف ڈیمو کریسی انٹر نیشنل نے میر شکیل الرحمان کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جو کام نیب کے دائرہ اختیار میں نہیں وہ اگر پھر بھی حکومت کے کہنے پر ایسی انتقامی کاروائیاں کررہا ہے تو یہ انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی ہے

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔