گجرات (جی پی آئی) عائشہ بشیر ہسپتال میں جاری پیشاب کی نالی کے پیدائشی نقائص کے علاج کیلئے جاری پلاسٹک سرجری کیمپ اختتام پذیر ۔ ڈاکٹر پروفیسر عبید اللہ کی زیر نگرانی درجنوں مریضوں کو چیک کیا گیا اور ان کے مفت آپریشن کیے گئے ڈاکٹر عبید اللہ خان نے بتایا کہ پاکستان ہی نہیں دنیا بھر میں یہ مسئلہ بہت عام ہے لیکن اس کا علاج بہت پیچیدہ اور مہنگا ہے پیشاب کی نالی کے نقائص کی وجہ سے بعض اوقات پیدائش کے بعد بچے کی جنس کا بھی پتہ نہیں چلتا اور کئی مواقعے پر یہ سلسلہ کئی سالوں تک چلتا رہتا ہے کئی دفعہ پتہ چلتا ہے کہ 15یا 16سال کے بعد لڑکی لڑکا بن جاتی ہے یہ صرف شعور نہ ہونے کی وجہ سے مسئلہ پیدا ہوتا ہے اگر اس مسئلے کا علاج بروقت کروا لیا جائے تو کئی سنگین مسائل سے چھٹکارا مل سکتا ہے ہم ڈاکٹر اعجاز بشیر کے شکر گزار ہیں کہ وہ ہمیں اور ہماری ٹیم کو عائشہ بشیر ہسپتال میں خدمت کا موقع دے رہے ہیں میں دنیا بھر میں اس مسئلے کے حل کیلئے اپنی خدمات سرانجام دے رہا ہوں اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر اعجاز بشیر نے کہا کہ میری زندگی کا مقصد پیسے کمانا نہیں عوام کی خدمت ہے اور اسی لیے 1992سے خدمت خلق کے مشن کے تحت کام کر رہا ہوں اور الحمد اللہ ہزاروں افراد کی زندگی بدل چکی ہے اور ڈاکٹر عبید اللہ خاں اور ان کے رفقاء کار کے شکر گزار ہیں کہ انہوں نے نہ صرف یہاں پر مریضوں کے فری آپریشن کیے بلکہ کئی ڈاکٹرز کو بھی تربیت دی تا کہ وہ اپنی اپنی سطح پر کام کرتے ہوئے مریضوں کی بہتری کیلئے اپنے فرائض سرانجام دے سکیں ، صدر گجرات لائنز کلب فراز ملک نے کہا کہ ڈاکٹر اعجاز بشیر ، ڈاکٹر عبید اللہ خاں دونوں کی کاوشیں قابل تحسین ہیں خصوصی طور پر ڈاکٹر اعجاز بشیر نے عائشہ بشیر ہسپتال بنا کر نہ گجرات بلکہ پاکستان کی عوام کو تحفہ دیا ہے اس سے عوام کو بے پناہ سہولت مل رہی ہے اور گجرات کے لائن ممبران کی طرف سے ڈاکٹر اعجاز بشیر کو اپنے بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہیں اس موقع پر حمزہ اعجاز ، شیخ عمر نوخیز ، ڈاکٹر رزاق احمد غفاری ، فیصل اشرف و دیگر بھی موجود تھے ۔

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔