کوٹلہ ارب علی خان(پ ر)چیئرمین تحریک انصاف کے قوم سے خطاب میں مسائل کی نشاندہی تو کی گئی لیکن ان کے حل کیلئے کوئی جامع پلان نہیں دیا گیا تقریر کے سیاق وسباق سے یہ ایسے معلوم ہوتا ہے کہ جیسے وہ انتخابی جلسہ کے خطاب کر رہے تھے پاکستان کے مسائل سے ہر کوئی آگاہ ہے وزیر اعظم پاکستان نے ان کے حل کی بجائے ان کی نشاندہی کر کے صرف قوم کو مایوس کیا ہے ان خیالات کا اظہار سالار قافلہ چوہدری عابد رضا ممبر قومی اسمبلی چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نیازی کے قوم سے خطاب پر رد عمل میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انھوں نے کہا چیئرمین تحریک انصاف نے جو قوم سے دوران انتخاب اور منتخب ہونے کے بعد وعدے کیے ہیں ان کے حل کیلئے اپوزیشن انھیں بھرپور موقع دے گی اور اپوزیشن اور اتحادی جماعتیں انھیں بھاگنے نہیں دیں گے وفاقی کابینہ میں کرپٹ وزراء کی شمولیت پر اپنا بھرپور احتجاج ریکارڈ کرائیں گے اور پاکستان میں کسی کو کرپشن نہیں کرنے دیں انھوں نے کہا کہ عمران خان صاحب گذشتہ پانچ سال سے کے پی کے حکومت میں ہیں لیکن انھوں نے اپنے خطاب میں کے پی کے میں سول کیسز کیلئے کوئی قانون نہیں بنایا اور نہ انھوں نے چائلڈ پروٹیکشن ایکٹ یا بیواوں کے تحفظ کیلئے کوئی قانون سازی کی ہے خان صاحب کا سارا خطاب مفروضوں پر مبنی تھا انھوں نے کہا کہ عمران خان صاحب کو اب اس بات کا ادراک ہونا چاہیے کہ جیسے بھی وہ ملک پاکستان کے وزیر اعظم منتخب ہو چکے ہیں اب انھیں مخالفین کو زیر کرنے کی بجائے اپنے وعدے پورے کرنے کی طرف توجہ دینی چاہیے انھوں نے کہا ایم کیو ایم اور دیگر سیاسی جماعتوں سے اتحاد کر کے خان صاحب نے ایک لڑکھڑاتی ہوئی حکومت بنا لی ہے لیکن ایسے محسوس ہو رہا ہے وہ حکومتی معاملات کو سنبھالنے کی بجائے حکومتی وزرا ء کو ہی سنبھالیں گے۔

By admin

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔