ڈنگہ (عبدالمجید پپو) بے ہنگم ٹریفک کے باعث ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا‘ روڈ پر جگہ جگہ قائم ناجائز رکشہ اسٹینڈ‘ ٹرانسپورٹ اڈے اور گاڑیوں کی غیر قانونی پارکنگ ٹریفک کی آمدورفت کی معطلی کا سبب‘ شہریوں‘ تعلیمی اداروں میں جانے والے طلباء سمیت ایمرجنسی ہسپتال جانے والے مریضوں کو شدید مشکلات جبکہ ٹریفک کو کنٹرول کرنے کی بجائے تعینات ٹریفک پولیس عملہ ڈنگہ مخصوص ”مورچہ“ سنبھال کر جیبیں بھرنے میں مصروف۔ تفصیلات کے مطابق ڈنگہ ٹریفک پولیس کی نا اہلی اور غیر ذمہداری کے باعث بوہڑ چوک‘ مین بازار میں بے ہنگم ٹریفک کے باعث گھنٹوں ٹریفک جام رہنا معمول بن چکا ہے۔ لاری اڈا پر جو شہر کا مین تجارتی مرکز ہے خریداروں کا رش ہونے اور روڈ کے عین اوپر گاڑیوں‘ موٹر سائیکلوں کی غیر قانونی پارکنگ جگہ جگہ چنگ چی رکشہ‘ ٹرانسپورٹروں‘ اڈے اور روڈ کنارے خرید و فروخت کے حوالے سے تجاوزات کی مد میں قائم غیر قانونی لگائی جانے والی دکانیں‘ ریڑھیاں ٹریفک کی معطلی کا سبب بن رہی ہیں۔ جس کے باعث سکول و کالج جانے والے طلباء و طالبات‘ سفر کے حوالے سے مسافروں‘ ایمرجنسی ہسپتال جانے والے مریضوں سمیت شہریوں کو ٹریفک جام رہنے سے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ جبکہ سٹی ٹریفک پولیس اہلکار ٹریفک کو کنٹرول اور رواں دواں کروانے کی بجائے اپنے من پسند ٹھکانے پر مورچہ زن ہو کر دیہاڑیاں لگانے میں مصروف نظر آتے ہیں۔ عوامی سماجی حلقوں‘ شہریوں‘ طلباء و طالبات نے ڈی آئی جی ٹریفک پولیس پنجاب‘ ڈی پی او گجرات عمر سلامت سے صورتحال کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

By admin