اوسلو (پ ر)وزیراعظم پاکستان عمران خاں نے سٹیزن پورٹل کے عملہ اور سرکاری محکموں کی عدم دلچسپی کی نشاندہی کے حوالے سے چیئرمین پاکستان یونین ناروے چوہدری قمر اقبال کی جانب سے 27ستمبر 2021ء کو لکھے خط پر نوٹس لیتے ہوئے 254آفیسران کو جعلسازی کے مرتکب ہونے پرمعطل کرنے کے احکامات دیدئے واضح رہے کہ گجرات کے رہائشی ناروے میں مقیم چوہدری قمر اقبال نے اوورسیز پاکستانیوں کی بڑھتی ہوئی مشکلات کے حوالے سے چھٹی میں وزیراعظم کوتفصیلا آگاہ کیاتھا کہ ملکی معیشت میں نمایاں شراکت داری کے باوجود سمندرپار پاکستانی اپنے ملک پاکستان میں استحصال کاشکار ہیں اوورسیز کے مسائل کے حل کیلئے سٹیزن پورٹل پر شنوائی نہ ہونے کے برابر ہے جسکا واضح ثبوت پنجاب اوور سیز کمپلیٹ سیل میں 9000 زیر التواء پڑی درخواستیں ہیں اسکے نااہل، کام چور، سست  عملہ نے ملک میں بہتر تبدیلی کے لیے آپکی کوششوں کو بے ثمر بناتے ہوئے سٹیزن پورٹل کو کاغذی کارروائی تک محدود کر دیاہے سیٹزن پورٹل پر شکایت کرنیوالے کو ریلیف فراہم کرنیکی بجائے الٹا مختلف دفاتر کے چکر لگا کرمزید  ذلیل وخوار کیاجارہا ہے پولیس اور ریونیو محکمہ کے اہلکاروں انصاف فراہمی کی بجائے الٹاشکایت کنندہ کو ملزم بنا  دے رہے ہیں جسکا باقاعدہ ریکارڈ بھی گواہ ہے چیئرمین پاکستان یونین ناروے چوہدری قمر اقبال نے اوورسیز پاکستانیوں کے حق میں آواز بلند کرتے ہوئے اس چٹھی میں واضح طور پر لکھا کہ ضلع گجرات کی بیشتر آبادی یورپ میں مقیم ہے جو پاکستان کی ہرمشکل میں حکومت کیساتھ کھڑے ہوتے ہیں مگر اسی ضلع کی ڈویژن گوجرانوالہ کے سرکاری ادارے سٹیزن پورٹل اور اوورسیز کمیشن پنجاب سے ہدایت لینے کے مجازہونے کے باوجود بے لگا م ہو چکے ہیں کیونکہ یہاں  ریونیو ڈیپارٹمنٹ کی کالی بھیڑوں کی مدد سے جعلی دستاویزات تیار کرکے سمندر پار پاکستانیوں کی جائیدادوں کو ہڑپ کر نا معمول بن چکا ہے سمندرپار پاکستانی مختصر مدت کیلئے اپنی مٹی اپنے وطن واپس آتے ہیں جہاں انہیں جھوٹے مقدمات میں الجھا کر انکی واپسی کا راستہ روکا جاتا ہے جس سے سمندر پار پاکستانیوں کی بیرون ممالک ملازمتیں اور کاروبار متاثر ہوتے ہیں انہوں وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ بے شک ان تمام تر حالات و واقعات کی از خود انکوائری کر کے حالات کا جائزہ لیں تو انہیں علم ہو گا کہ اوورسیز پاکستانیوں کو کس طرح جھوٹے مقدمات میں  الجھا کر  پولیس اورریونیو کے بھتہ مافیاز ان سے بھتہ اوررشوت وصول کرتے ہیں جس پر سیٹزن پورٹل کے عملہ کے خلاف درخواست کی روشنی میں خفیہ انکوائری کی گئی تو پنجاب کے 154، کے پی کے 86، سندھ کے 3اور وفاق کے 11افیسران جعلی رپورٹس تیار کرہے تھے چیئرمین پاکستان یونین ناروے چوہدری قمر اقبال نے وزیراعظم پاکستان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ بلاشبہ اس عمل سے ثابت ہوچکا ہے کہ وزیراعظم سمندرپار پاکستانیوں کی خدمات کے معترف ہیں اور وہ انہیں ہر ممکن ریلیف فراہم کرنے کیلئے کوشاں ہیں چوہدری قمراقبال نے مطالبہ کیا کہ وزیراعظم، وزیراعلیٰ پنجاب گجرات، گوجرانوالہ ڈویژن سمیت ملک بھر کے اوورسیزپاکستانیوں کو قبضہ مافیا اور بھتہ مافیا سے بھی نجات دلوائیں۔

By admin